جو شخص ایک صوبہ ڈھنگ سے چلانے کی صلاحیت نہیں رکھتا وہ ملک کیسے چلا پائے گا

Pic for Press

جو شخص ایک صوبہ ڈھنگ سے چلانے کی صلاحیت نہیں رکھتا وہ ملک کیسے چلا پائے گا

کراچی(22-5-2016)پاکستان مسلم لیگ (ن)سندھ کے نائب صدر علی اکبرگجر نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی منفی سیاست نے جمہوریت کا چہرہ مسخ کردیا ہے۔پاکستان کے عوام کوان کے سیاسی فلسفے پر شرمندگی ہوتی ہے اور انہیں یقین ہوچکا ہے کہ وہ عوام کے لئے نہیں کسی کے اشاروں پرعوام کو گمراہ کرنے کے لئے سیاست کررہے ہیں۔ عمران خان نئی نسل کو جو سبق پڑھا رہے ہیں وہ ہماری تہذیب اور ثقافت کا حصہ نہیں بلکہ مشرقی روایات کے برعکس ہے۔یہ ان کی بدکلامی اورمغروری کا نتیجہ ہے کہ ایک ایک کرکے متحدہ اپوزیشن کی جماعتیں ان سے الگ ہوتی جارہی ہیں۔پاکستانی سیاست میں ان کا کوئی مستقبل نہیں،وہ سیاسی میدان میں کل بھی تنہا تھے اور آنے والے کل میں بھی تنہا ہوں گے۔ اللہ کا شکر ہے کہ ان کاچہرہ جلد ہی بے نقاب ہوگیا ہے،عوام ایک بہت بڑے دھوکے سے بچ گئے ہیں اورسیاسی جماعتوں کے علاوہ عوام بھی ان سے متنفر ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شرافت اور دیانت مسلم لیگ(ن)کاشیوہ ہے،اس لئے عمران خان کی گالی کا جواب گالی سے نہیں دینا چاہتے لیکن برداشت کی کوئی حد ہوتی ہے،مسلم لیگ(ن) کے کارکن جواب دینے پر آئے تو بات بہت دور تک نکل جائے گی۔ہرجلسے میں مسلم لیگ(ن) کی قیادت اور حکومت کے خلاف جس طرح کی زبان استعمال کی جا رہی ہے وہ کسی طرح سے اخلاقیات کے دائروں میں نہیں آتی۔وہ حکومت کو گالیاں دینے کی بجائے کام میں مسلم لیگ(ن)کا مقابلہ کریں تو انہیں احساس ہو گا کہ پنجاب اور بلوچستان کے مقابلے پران کی کارکردگی صفر ہے۔پنجاب اور بلوچستان میں مسلم لیگ(ن) نے ترقی اور امن کا جو سلسلہ شروع کیا ہے اس نے ان دونوں صوبوں میں عام آدمی کی تقدیر بدل کررکھ دی ہے اور عوام قائدجمہوریت میاں نوازشریف کو دعائیں دے رہے ہیں۔علی اکبر گجر نے کہا کہ عمران خان پاکستانی سیاست کے متنازعہ ترین کردار ہیں جنہیں عوام نے ایک صوبے کا مینڈیٹ دیا لیکن وہ اپنے صوبے کے عوام کو مطمئن نہیں کرسکے اور نہ ہی اپنے صوبے میں لاقانونیت اور کرپشن کو روک سکے ہیں۔عمران خان کے بارے میں اب یہ رائے پختہ ہورہی ہے کہ جو شخص ایک صوبہ ڈھنگ سے چلانے کی صلاحیت نہیں رکھتا وہ ملک کیسے چلا پائے گا۔

/ حالیہ خبریں

Share the Post